علی وزیر شدید بیماری میں مبتلا ہے، علاج نہیں کرنے دیا جا رہا: پی ٹی ایم رہنما

پی ٹی ایم
پی ٹی ایم رہنماوں نے علی وزیر کے علاج کا مطالبہ کیا ہے۔

پشتون تحفظ موومنٹ کے رہنما قاضی طاہر محسود نے نے ٹوئٹر پر متعدد پوسٹ کرکے پی ٹی ایم رہنما و ممبر قومی اسمبلی علی وزیر کی بیماری کے حالات کا تذکرہ کیا ہے ـ

قاضی طاہر کا کہنا ہے کہ علی وزیر شدید بیماری میں مبتلا ہے، ان کا بایاں جانب سُن ہوجاتا ہے جس کی وجہ سے وہ اٹھ بیٹھ نہیں سکتے ـ

قاضی نے کہا کہ ہم علی وزیر سے ملاقات کیلئے گئے تو مجھے علی وزیر نے بتایا کہ صحت گھٹتی جا رہی ہے یہ لوگ علاج کیلئے باہر جانے کی اجازت بھی نہیں دے رہے ـ

ان کا کہنا تھا کہ جب بجٹ بل کیلئے انہیں جیل سے باہر لایا گیا تھا تو ڈاکٹرز نے دس دن ہسپتال میں رہنے اور علاج کرنے کا مشورہ دیا تھا لیکن آرمی چیف قمر جاوید باجوہ نے اس کی اجازت نہیں دی ـ

یاد رہے کہ چند روز قبل جب آرمی چیف سے علی وزیر کی رہائی کا تذکرہ کیا گیا تو انہوں نے جواب دیا کہ علی وزیر معافی مانگے تو اسے رہائی مل سکتی، ان کے اس پیشکش کو علی وزیر نے ٹھکرادیا ـ

علی وزیر نے اس کے بعد ایک مختصر بیان میں کہا کہ عدلیہ، اسمبلی اور دیگر سیاسی معاملات میں دخل اندازی، قتل و غارتگری اور لوگوں کو لاپتہ کرنے پر قمر جاوید باجوہ کو معافی مانگنی چاہئے ”میں ریزہ ریزہ ہوجاؤں گا لیکن اس سے معافی نہیں مانگوں گا“ـ

پشتون تحفظ موومنٹ کے دیگر رہنماؤں نے بھی اس معاملے میں اداروں کی مخالفت کی اور ان کے علاج کروانے کا مطالبہ کیا ـ

علی وزیر پشتون تحفظ موومنٹ کے سخت گیر رہنما ہیں اور جنوبی وزیرستان کی جانب سے قومی اسمبلی میں ممبر بھی ہیں، انہیں اپریل سے فوج نے گرفتار کر رکھا ہے ـ

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

براہ کرم ایڈ بلاکر کو غیر فعال کریں اور ہمارے ساتھ تعاون کریں.

 یا اس ویب سائٹ کو اپنے ایڈ بلاکر سے وائٹ لسٹ کریں. شکریہ

شیئر کریں
error: ڈیٹا کاپی رائٹ محفوظ ہے!