سمیع خٹک کہ تحریر ‘چابی چین’

یہ ایک عام سی بات ہے کہ انسان ہمیشہ وہی کرتا ہے جس میں اس کا فائدہ ہو اور آگے دوسروں کو بتاتا بھی وہی ہے اور اتنا ہی بتاتا ہے جہاں تک اس کو اپنا مفاد نظر آ رہا ہو۔ انسان جتنا مفاد پرست ہے شاید ہی انسان کو خود اس امر کا اندازہ…

لالا کی پہلی اولاد ‘چھٹکی’ | سمیع خٹک

لالا عارف خٹک اب ناولسٹ بھی بن گئے، اس سے قبل موصوف بلاگر، کالمسٹ، صحافی، سکالر، موٹیویشنل سپیکر جیسے قیمتی عہدے اپنے پاس رکھے ہوئے ہیں۔ ابھی کچھ دن قبل کسی صاحب نے یہ بھی بتایا کہ لالا ڈاکٹر بھی ہیں، اب یہ نہیں معلوم لالا کس ہسپتال میں بطور ڈاکٹر اپنے فرائض سرانجام دے…

کرک کو “کرک”کیوں کہتے ہیں | آفتاب خٹک

  قبیلہ خٹک کی آماجگاہ کرک خیبر پختونخوا کا ایک ایسا ضلع ہے جو اپنے نام وساٸل اور کامیاب شخصیات کے لحاظ سے ممتاز مقام اپناۓ ہوۓ ہیں۔شخصیات ،معدنی ذخاٸر اور وساٸل کو ایک طرف رکھ کر ہم جاننے کی کوشش کرینگے کہ کرک کو کرک کیوں کہتے ہے اور اسکا یہ نام کس طرح…

سیف الرحمن کی تحریر ‘ہم پشتون ہیں یا افغانی’

کثر ہمارے پختونخواہ کے پختونوں میں اس بات پہ بحث ہوتی ہیے کہ ہم افغان ہیں یا پختون اکثر کہتے ہیں کہ ہم افغان ہیں دلیل یہ دیتے ہیں کہ ہمارے ڈومیسایل اور کاغذات وغیرہ میں افغان لکھا ہے اور پختونخواہ سکھوں کے انے سے پہلے افغانستان کا حصہ تھا اور افغانی ریاست اس بارڈر…

سیف خٹک کی تحریر ‘ہمارہ معاشرہ’

  اگر دیکھے جب سے پاکستان وجود میں ایا ہے، ہمارے معاشرے میں دو طبقے ایسے ہے، جن کی مابین ایک جنگ جاری ہے اور اس جنگ کی ایندھن عام عوام بن رہے ہیں۔ یہ جنگ مولوی اور لیبرلز کی بیچ میں چلتی آٸی ہے۔ کہیں پر مولوی معاشرے کی فاٸدے کی بات کریں تو…

ریاست ہزارہ کی سوتیلی ماں | سمیع اللہ خٹک

دنیا کی تاریخ میں طاقتور ترین حکمران منگول، ظالم اور جابر حاکم چنگیز خان اور ہلاکو خان کی نسل ہزاروال آج اپنے گلے کٹوا کر اپنی نسل کی معدوم ہونے کے خطرے سے دوچار ہیں۔ کہیں یہ لوگ اپنے اجداد کے اعمالوں کا کفارہ تو نہیں ادا کر رہے؟، اس جملے سے مراد ہرگز یہ…

وزیراعظم قطر سے واپس کب آئنگے؟ | سمیع اللہ خٹک

22 سالہ جد و جہد، 22 سالہ نواجوان اور 22 گولیاں۔۔۔ یہ الفاظ جہاں لکھتے ہوئے میرے ہاتھ کانپ رہے ہیں، میرہ انگلیاں میرا ساتھ چھوڑ رہی ہیں وہی ایک ماں، ایک والد، ایک بہن جو اس کرب اور اذیت سے گزر رہی ہیں ان کا کیا حال ہوگا۔ کیا نئے سال کی خوشیاں ایسی…

صفدر حیات کی تحریر “طرز اعمال بھی”

کہتے ہیں کہ امام ابو حنیفہ کا زمانہ تھا اور امام صاحب اپنی درسگاہ میں شاگردوں کے ساتھ درس و تدریس میں مشغول تھے کہ امام صاحب کو ایک ضروری کام یاد آیا امام صاحب درسگاہ سے نکل کر اس جانب چل دیئے۔ کچھ دیر بعد درسگاہ میں ایک بزرگ کی آمد ہوئی جو کہ…

سمیع خٹک کی تحریر ‘مسماری اور خاموش قانون’

سنتے آ رہے ہیں کہ مذہب، معاشرہ اور ماحول انسان کے تعمیر کی بنیاد ہوتی ہے اور انہی تین چیزوں سے انسان کی تربیت ہوتی ہے۔ یہی مذہب، معاشرہ اور ماحول انسان میں تمیز پیدا کرتا ہے. میرے پختونستان کی یہ بدقسمتی کہ لیجئے یا جہالت کہ کمزوروں پر چڑھ دوڑنا اور انکی املاک کو…

ضیاء خٹک کی تحریر “میرا سال 2020”

  سال 2019 کے آخیر میں میںِ نے یونیورسٹی میں ایڈمشن لیا، یونیورسٹی کلاسسز کا باقاعدہ آغاز 2020 میں ہوا، یونیورسٹی میں میرا ایڈمشن بلکل اچانک ہوا تھا میرا کسی بھی قسم کا ارادہ نہیں تھا اپنی زندگی میں یونیورسٹی کا تجربہ حاصل کرنے کا ، انٹر کرنے کے بعد مجھے گھر کا ہر فرد…

براہ کرم ایڈ بلاکر کو غیر فعال کریں اور ہمارے ساتھ تعاون کریں.
یا اس ویب سائٹ کو اپنے ایڈ بلاکر سے وائٹ لسٹ کریں. شکریہ

error: ڈیٹا کاپی رائٹ محفوظ ہے!