کشمور؛ ماں اور 4 سالہ بیٹی کیساتھ مسلسل دو ہفتوں تک اجتماعی زیادتی کا واقعہ

کشمور؛ ایک ماں اور انکی چار سالہ بیٹی کو اجتماعی زیادتی کا واقعہ سامنے آیا ہے۔ خاتون کو نوکری کا جھانسہ دے کر خاتون کو بیٹی سمیت اغواء کر لیا گیا، جس کے بعد انکو اور انکی چار سالہ بچی کو دو ہفتے تک اغواکاروں نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔

رپورٹس کے مطابق متاثرہ خاتون کراجی کے ایک ہسپتال میں کام کرتی ہیں، جنکو زیادہ تنخواہ والی نوکری کا لالچ دیکر ایک جگہ بلایا۔

طے شدہ جگہ پر متاٹرہ خاتون اپنی بیٹی کیساتھ پہنچی تو رفیق ملک نامی مقامی رہائشی نے دو ساتھیوں کیساتھ ملکر خاتون اور بچی کو اغواء کر لیا۔

قریب 2 ہفتوں کے بعد ملزمان نے خاتون کو چھوڑ دیا لیکن اس کی بیٹی کو اپنے پاس رکھا۔ ملزمان نے بچی کے بدلے دوسری عورتیں لانے کا مطالبہ کیا۔

ملزمان نے نتاثرہ خاتون کو دھمکی دی کہ اگر اس عورت نے حکم نہ مانا تو اس کی بیٹی کو جان سے مار ڈالیں گے۔ متاثرہ خاتون نے رہائی کے بعد کشمور میں پولیس اسٹیشن میں واقعہ کو رپورٹ کیا۔

جس کے بعد پولیس نے چھاپہ مار کارروائی کی اور مرکزی ملزم ملک کو گرفتار کرلیا۔ ماں اور بچے دونوں کو تالہ اسپتال کشمور منتقل کردیا گیا۔ بچے کو اب لاڑکانہ کے اسپتال لے جایا گیا ہے جہاں اس کی حالت تشویشناک ہے۔

شیئر کریں

تبصرے بند ہیں

براہ کرم ایڈ بلاکر کو غیر فعال کریں اور ہمارے ساتھ تعاون کریں.

 یا اس ویب سائٹ کو اپنے ایڈ بلاکر سے وائٹ لسٹ کریں. شکریہ

شیئر کریں
error: ڈیٹا کاپی رائٹ محفوظ ہے!