حریم فاطمہ قتل کیس: گرینڈ جرگے نے قاتلوں کی گرفتاری کیلئے 48 گھنٹوں کی مہلت دے دی

کوہاٹ: (ویب ڈیسک) حریم فاطمہ قتل کیس میں گرینڈ جرگے نے قاتلوں کی گرفتاری کیلئے دی گئی 72 گھنٹوں کی ڈیڈلائن میں مزید 48 گھنٹوں کی توسیع کر دی۔

گرینڈ جرگہ کے عمائدین سابق ممبر قومی اسمبلی شاہ عبدالعزیز اور ممبر صوبائی اسمبلی میاں نثار گل کاکاخیل نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ حریم فاطمہ قتل کیس میں ملزمان کی گرفتاری کیلئے 72 گھنٹوں کی ڈیڈلائن دی تھی، پولیس کی پیش رفت سے مطمئن ہونے پر 48 گھنٹوں کی مزید مہلت دے دی، جبکہ کوہاٹ ہسپتال کے لیڈی ڈاکٹر کے رپورٹ اور خاندان کے بیان میں تضاد ہے، جس کی وجہ سے پولیس نے فرانزک رپورٹ لاہور بھیجوائی جس میں 48 گھنٹگھنٹے لگ سکتے ہیں۔

گرینڈ جرگہ عمائدین نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ اگر 48 گھنٹوں بعد ملزمان کی گرفتاری ممکن نہ ہوئی، تو ہم خود سر پر کفن باندھ کر نکلیں گے اور جو بھی ملوث پایا گیا اس کو خود سرعام پھانسی دینگے۔

گرینڈ جرگہ عمائدین نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہم خٹک قوم ہیں، حریم فاطمہ قوم کی بیٹی تھی اور ہم حریم فاطمہ کے قاتلوں کی گرفتاری چاہتے ہیں۔

دوسری جانب ممبر اسمبلی کامران بنگش نے حریم فاطمہ کے لواحقین سے تعزیت کیلئے ملاقات کی اور وزیراعلی محمود خان کا تعزیتی پیغام پہنچایا، کامران بنگش نے قاتلوں کی گرفتاری کی یقین دہانی کرا دی۔

شیئر کریں
براہ کرم ایڈ بلاکر کو غیر فعال کریں اور ہمارے ساتھ تعاون کریں.

 یا اس ویب سائٹ کو اپنے ایڈ بلاکر سے وائٹ لسٹ کریں. شکریہ

شیئر کریں
error: ڈیٹا کاپی رائٹ محفوظ ہے!