جادوئی گھڑے کی کہانی

اس رب کائنات میں ہر انسان کی خواہش ہوتی ہے کہ وہ کامیاب ہو جائے اور اس کامیابی کیلئے وہ تگ و دو اور محنت کرتا رہتا ہے۔ مگر آج کل اگر ہم دیکھتے ہیں تو لوگوں کہ اکثریت ایسی ہے جو بغیر محنت کے کامیاب ہونا چاہتے ہیں یعنی ایک ‘شارٹ کٹ’ طریقے سے اپنے آپ کو اپنی منزل تک پہنچنے کے خواہشمند ہوتے ہیں، یا یوں کہہ لیجئے کہ کامیابی ایک خزانہ ہے اور ہر کوئی اسے پانا چاہتا ہے، اس خزانے کو پانی کے لیے بنی نو انسان کئی قسم کے حربے اور طریقے اپناتا ہے۔

اب یہ بات بھی کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہے کہ کامیابی اور محنت لازم و ملزوم ہے۔ ہم میں سے اکثر نوجوان کامیابی جلدی نہ ملنے پر مایوسی کا شکار ہو جاتے ہیں اور پھر اپنی قسمت کو کھوستے رہتے ہیں۔ یہاں اس بات سے بھی انکار نہیں کیا جاسکتا کہ کامیابی کے لیے قسمت یا نصیب ہونا ضروری ہے مگر یہ بات بھی درست ہے کہ کامیابی حاصل کرنے کے لیے سخت اور کھڑی محنت ضروری ہے۔ ہماری بد قسمتی یہ ہے کہ ہم کامیابی کے خزانے کو پانی کے لئے شارٹ کٹ کو اپناتے ہیں۔

کچھ عرصہ پہلے میری ملاقات میری ایک استاد سے ہوئی، باتوں باتوں میں کامیابی کا موضوع زیر بحث آیا، میں نے جلدی اور بغیر محنت کے کامیاب ہونے کی خواہش کا اظہار کیا تو میرے استاد نے مجھے اس حوالے سے ایک کہانی سنائی، یہ کہانی میرے ہی جیسے ایک نوجوان کی تھی جس بغیر محنت اور تگ و دو کے کامیابی حاصل کی تھی۔

میرے استاد محترم نے کہانی سناتے ہوئے کہا کہ بہت سال پہلے ایک گاؤں میں ایک نوجوان قیام پذیر تھا، وہ نوجوان اپنی ناکامیوں سے انتہائی مایوس ہو چکا تھا، اس نوجوان پر اپنے گاؤں کے تقریبا ہر بندے کا قرض تھا اور کردار روزانہ آتے اور اپنی قرض کی ادائیگی کی مانگ کرتے۔ وہ نوجوان قرض مانگنے والوں سے اتنا تنگ آ چکا تھا کہ انہوں نے اپنی زندگی لینے کا فیصلہ کر لیا، ایک روز صبح سویرے وہ نوجوان خودکشی کے ارادے سے گھر سے باہر نکلا اور ایک پہاڑی پر پہنچ گیا۔ اس کا ارادہ تھا کہ وہ اس پہاڑی سے نیچے کی طرف کؑود کر اپنی جان لے گا، چلانگ لگانے سے چند لمحے قبل اپنی ناکامیوں کی ایک ریل اس کے ذہن میں چل رہی تھی، وہ نجوان پہاڑی سے کھودنے ہی لگا تھا کہ وہ پر موجود ایک بزرگ نے انہیں آواز دی۔

بزرگ کو نوجوان کے حرکات و سکنات سے ان کے عادی کا علم ہو چکا تھا، انہوں نے نوجوان کو آواز دے کر اپنے پاس بلایا اور مسئلہ دریافت کیا، بزرگ کی کافی اصرار پر نوجوان نے بزرگ کو پورا قصہ سنایا، نوجوان کے مسائل روپے پیسے کے گرد گھوم رہے تھے۔ گزرنی جو ان سے کہا کہ آپ کے مسائل حل کرنے کیلئے میرے پاس ایک حل ہے مگر آپ کو اس کے لیے محنت کرنی پڑے گی، نوجوان بزرگ کی بات سن کر تھوڑا پر امید ہو گیا، جو نرگس سے دریافت کیا کہ آپ کے پاس میرے مالی مشکلات کو حل کرنے کے لیے کیا حل ہے؟ بزرگ نے فرمایا کہ میرے پاس ایک ایسا گھڑا (پانی والا) ہے جس سے آپ کسی بھی قسم کی خواہش پوری کر سکتے ہیں، مگر اس میں ایک مسئلہ ہے کہ اگر وہ گر ٹوٹ گیا تو اس گھڑے سے ملنے والی ہر چیز ختم ہو جائے گی۔

نوجوان نے بزرگ سے پوچھا کہ مجھے اس گھڑے کو پانے کیلئے کیا محنت درکار ہو گی؟ بزرگ نے فرمایا کہ ایک گڑھا میں آپ کو دے دوں گا جو میرے پاس موجود ہے مگر آپ کو اس کے لئے تین سال تک میری خدمت کرنا ہوگی، اور اگر آپ پانچ سال تک میری خدمت کرو گے تو میں آپ کو اس گھڑی کی بناوٹ کا فارمولا بھی بتاؤں گا۔ گزر گئی یہ بات سن کر نوجوان تھوڑا سا لالچ میں آگیا اور انہوں نے کہا کہ میں آپ سے یہ جھگڑا لے لوں گا اور اس کے بدلے میں آپ کی تین سال تک خدمت کرنے کیلئے تیار ہوں۔

تین سال نوجوان نے اس بزرگ کی خدمت کی اور تین سال بعد بزرگ نے نوجوان کو وہ گھڑا حوالے کر دیا، نوجوان نے اس گھڑے سے اپنی تمام تر خواہشات جس کے وہ خواب دیکھتا تھا پورے کرنے شروع کر دیے، اس نوجوان نے اپنی لیے گھڑے سے ایک محل، نوکر چاکر اور وہ تمام آسائشیں جس کے بارے میں اسے معلوم تھا حاصل کرنا شروع کر لیں۔ نوجوان عیش و عشرت کی زندگی گزارنے لگا، شراب، کباب اور شباب اس کی زندگی کا حصہ بن گئے تھے۔ ایک دن شراب کے نشے میں اس نے وہ گھڑا اپنے سر پر اٹھایا اور ناچنے لگا، شراب کے نشے میں ناچتے ہوئے اس نوجوان سے وہ جادوئی گھڑا گِر گیا اور کئی ٹکڑوں میں تقسیم ہو گیا۔ جادوئی گھڑے سے ملنے والی ہر چیز ہوا ہو گئی۔

اب وہ نوجوان پھر سے اسی جگہ پر آ گیا تھا، جہاں سے اس نے شروعات کی تھی۔ نا تو اس کے پاس گھڑے کو دوبارہ بنانے کا فارمولا تھا اور نہ ہی اس بزرگ کو تلاش کرنے کا حوصلہ۔۔۔
میری استاد نے مجھے بتایا کہ اگر انہوں جو ان دو سال مزید اس بزرگ کی خدمت کرتا اور محنت کرتا تو اس جادوئی گھڑے کو بنانے کا فارمولا بھی اسے مل جاتا، پھر اگر کبھی بھی وہ جادوئی گھڑا ٹوٹ بھی جاتا تب بھی اس کے لئے کوئی مشکل نہ ہوتی۔ بالکل اسی طرح اگر ہم نوجوان نسل سخت اور کھڑی محنت، منزل کی صحیح سیمت کا تعین کر کے کامیابی کی طرف سفر شروع کر لیں تو ایک دن کامیابی ضرور قدم چھومتی ہے۔

شیئر کریں
براہ کرم ایڈ بلاکر کو غیر فعال کریں اور ہمارے ساتھ تعاون کریں.

 یا اس ویب سائٹ کو اپنے ایڈ بلاکر سے وائٹ لسٹ کریں. شکریہ

شیئر کریں
error: ڈیٹا کاپی رائٹ محفوظ ہے!